Top Panel
You are here: HomeNewsجماعت اسلامی کا یک روزہ مجلس شوریٰ اجلاس منعقد
Sunday, 09 September 2018 10:29

جماعت اسلامی کا یک روزہ مجلس شوریٰ اجلاس منعقد

Rate this item
(2 votes)

جماعت اسلامی کا یک روزہ مجلس شوریٰ اجلاس منعقد

 

تنظیمی، دعوتی، سیاسی ، سماجی سمیت متعدد معاملات زیر بحث 

 

خصوصی پوزیشن میں کسی بھی خلل اندازی کو قطعاً برداشت نہیں کیا جائے گا

 

سرینگر//8ستمبر سنیچر کو جماعت اسلامی جموںوکشمیر کی مرکزی مجلس شوریٰ کا یک روزہ اجلاس زیر صدارت نومنتخب امیر جماعت اسلامی 

 

ڈاکٹر عبدالحمید فیاض مرکز جماعت پر منعقد ہوا جس میں تنظیمی اُمور کے ساتھ ساتھ جموں وکشمیر کی موجودہ صورتحال پر سیر حاصل گفتگو ہوئی اور تنظیمی استحکام و توسیع کی خاطر کئی مو ¿ثر اقدامات کئے گئے۔اس کے علاوہ مقامی سماجی مسائل کو بھی زیر بحث لایا گیا اور اس حوالے سے جماعت کی پالیسی وضع کی گئی۔ سماجی اصلاحات کے متعلق اسلامی تعلیمات کی روشنی میںموقعے پر ہی ہدایات جاری کی گئیں اور ان کو عملانے کی خاطر ایک لائحہ عمل بھی تشکیل دیا گیا۔ ریاست میں انسانی حقوق کی خلاف ورزیوں پر بھی گہری تشویش کا اظہار کرتے ہوئے وادی اور بیرون وادی جیلوں میں نظر بند سینکڑوں سیاسی زعما اور کارکنوں کی حالت زار کو بھی زیر بحث لایا گیا۔

 

تنظیمی استحکام و توسیع: جماعت اسلامی کے مقصد وجود کو مدنظر رکھتے ہوئے تنظیم کے استحکام اور توسیع کی خاطر کئی اقدامات کیے گئے اور تعلیم و تربیت اور دعوت و تبلیغ کے شعبہ جات کو جدید تقاضوں کے مطابق عمل میں لانے کی خاطر کئی تجاویز کو پاس کیا کیا۔ وابستگان جماعت کی تعلیم و تربیت کی طرف خصوصی توجہ دینے پر زور دیا گیا اور اس سلسلے میں مرکزی اور ضلعی ذمہ داروں کو خصوصی ہدایات دی گئیں۔ تنظیم کے توسیع کی خاطر دعوتی، تبلیغی اور تربیتی سرگرمیوں میں ہر سطح پر بڑھایا جائے گا اور اس کے لیے تمام درکار وسائل کو بروئے کار لایا جائے گا۔

 

مسئلہ کشمیر: جماعت اسلامی جموں وکشمیر مسئلہ کشمیر کو حل طلب مانتے ہوئے اپنے اس مو ¿قف کا اعادہ کرتی ہے کہ اس دیرینہ انسانی مسئلے کا حل یا تو اقوام متحدہ کی قرار دادوں میں مضمر ہے یا سہ فریقی مذاکرات کے ذریعے اس کا ایک قابل قبول حل یہاں کے عوام کی خواہشات کے مطابق تلاش کیا جاسکتا ہے۔ جموںوکشمیر کے عوام ایک بنیادی فریق کی حیثیت رکھتا ہے اور اس کے حقیقی نمائندوں کی شرکت کے بغیر کسی حل کی تلاش کی کوئی کوشش سعی لاحاصل کے مترادف ہے۔ برصغیر ہندوپاک کے کروڑوں عوام کی بھلائی، خوشحالی اور ترقی کے لیے اس مسئلے کا ایک منصفانہ حل ناگزیر ہے۔ جماعت اسلامی اقوام عالم کے ساتھ ساتھ ہندوپاک کی حکومتوں پر بھی زور دیتی ہے کہ وہ اس بنیادی مسئلے کے حل کی خاطر کسی تاخیر کے بغیر مو ¿ثر کوششوں کا آغاز کریں۔

 

جموںوکشمیر کی خصوصی پوزیشن: آئین ہند کی دفعات 370اور 35Aکے تحت جموںوکشمیر کو جو خصوصی پوزیشن اور اختیارات حاصل ہیں وہ دراصل جموںوکشمیر کے باشندوں کو اپنے حق خودارادیت کے حصول تک اُن کے حقوق کو بطور تحفظ حاصل ہیں تاکہ بیرون ریاست کوئی یہاں کا مستقل باشندہ بن کر اُن کے حق میں رخنہ ڈالنے کی پوزیشن میں نہ ہواور یہاں آبادی کا جو تناسب پایا جاتا ہے اس میں کسی قسم کا کوئی خلل نہ ہونے پائے۔ اس کے علاوہ یہاں کے مستقل باشندوں کو جو خصوصی اختیارات حاصل ہیں ان میں کسی قسم کی کوئی رخنہ اندازی نہ ہونے پائے۔ اگر چہ 1950کے بعد یہاں کے تخت پر براجمان لوگوں نے ان اختیارات میں کافی رخنہ اندازی کی ہے لیکن آبادی کے تناسب میں اس کے باوجود کوئی خاص خلل کرنے میں وہ کامیاب نہیں ہوئے ہیں۔ جماعت اسلامی جموںوکشمیر اس ریاست کے مستقل باشندوں کو ان دفعات کے تحت حاصل خصوصی اختیارات اور پوزیشن میں کسی بھی قسم کی خلل اندازی کو قطعاً برداشت نہیں کرے گی اور اس سلسلے میں جاری عوامی تحریک کا بھر پور اور ہر سطح ہر تعاون دینے کی وعدہ بند ہے۔

 

انسانی حقوق کی پامالی: جماعت اسلامی جموںوکشمیر وادی کے طول و عرض میں بھارتی فورسز اہلکاروں کے ہاتھوں انسانی حقوق کی روز افزوں پامالی پر گہری تشویش کا اظہار کرتے ہوئے اقوام عالم، اسلامی ممالک کی تنظیم اور انسانی حقوق کے تحفظ سے متعلق عالمی اور مقامی اداروں پر زور دیتی ہے کہ وہ ان خلاف ورزیوں کو رکوانے کی خاطر اپنے سفارتی اختیارات کا استعمال کریں اور آج تک ہوئی پامالیوں کا ایک عالمی غیر جانبدارانہ ادارے کے ذریعے تحقیقات کرواکے، عالم انسانیت کو صحیح صورتحال سے باخبر کریں۔ وادی کے اندر اور بیرون وادی دور دراز جیلوں میں سینکڑوں سیاسی نظر بند مسئلہ کشمیر کی حقانیت کی تائید میں آواز بلند کرنے کی پاداش میں مختلف سختیاں جھیل رہے ہیں اور اُن کے ساتھ مجرموں کی طرح وحشیانہ سلوک کیا جارہا ہے جو قیدیوں سے متعلق بین الاقوامی قوانین کی صریح خلاف ورزی ہے۔ وادی کے اندر پیش آنے والے واقعات کی تحقیقات کی خاطر یہاں نوجوانوں اور زعما کو گرفتار کرکے دہلی کی جیلوں میں نظر بند کیا جارہا ہے جو سراسر ایک انتقامی کارروائی ہے۔ جماعت اسلامی جیلوں، انٹروگیشن سنٹروں، تھانوں اور فوجی کیمپوں میں زیر حراست تمام نظر بندوں اور قیدیوں کے ساتھ مکمل یکجہتی کا اظہار کرتے ہوئے ان کی غیر مشروط رہائی پر زور دیتی ہے اور حق خودارادیت کا مطالبہ کرنے کی پاداش میں پولیس تھانوں میں درج تمام مقدمات کو منسوخ کرانے کا مطالبہ کرتی ہے۔

 

انتخابی عمل: جماعت اسلامی جموںوکشمیر 1987ءکے اسمبلی انتخابات کے بعد ہر قسم کے انتخابات سے دور رہی ہے اور تب سے کسی بھی اس طرح کے عمل میں براہ راست یا بالواسطہ کوئی حصہ نہیں لے رہی ہے اور اس سلسلے میں اپنے وابستگان کو اسی پالیسی پر کاربند رہنے کی ہدایات دیتی آئی ہے۔ جماعت آئندہ بھی اسی پالیسی پر کاربند رہے گی اور اپنے وابستگان کو اسی پالیسی کو اختیار کرنے کی ہدایت کرتی ہے۔

 

سماجی اصلاحات: جموںوکشمیر میں بڑھتی ہوئی سماجی برائیوں پر زبردست فکر کا اظہار کرتے ہوئے تمام دینی و سماجی تنظیموں اور اداروں پر زور دیتی ہے کہ سماجی برائیوں اور بدعات کا قلع قمع کرنے کی خاطر متحد ہوکر ایک منظم پروگرام تشکیل دیا جائے تاکہ سماج کو ان کے برے نتائج سے حتی الامکان بچایا جائے۔ نیز ان برائیوں میں ملوث افراد کی اصلاح کے لیے ہر ممکن کوششیں کی جائیں۔ مجلس اتحاد ملت جموںوکشمیر جو مختلف دینی تنظیموں اور اداروں پر مشتمل ایک متحدہ فورم ہے کو مزید مستحکم کرنے کی خاطر‘ جماعت اسلامی ہر قسم کا تعاون پیش کرے گی اور اس فورم کے ذریعے ملت اسلامیہ جموںوکشمیر کے درمیان اتحاد و اتفاق کو مزید مستحکم کرانے کے لیے استعمال کیا جائے گا۔

 

ایڈوکیٹ زاہد علی

 

ترجمان اعلیٰ 

 

جماعت اسلامی جموںوکشمیر

Read 125 times

Al'Quraan

The woman and the man guilty of illegal sexual intercourse, flog each of them with a hundred stripes. Let not pity withhold you in their case, in a punishment prescribed by Allah, if you believe in Allah and the Last Day. And let a party of the believers witness their punishment. (This punishment is for unmarried persons guilty of the above crime but if married persons commit it, the punishment is to stone them to death, according to Allah's Law).

Al'Quraan Surah Noor

Prophet Mohammad PBUH

Narrated: Abu Huraira (R.A) that a man said to the Prophet, sallallahu 'alayhi wasallam: "Advise me! "The Prophet (PBUH) said, "Do not become angry and furious." The man asked (the same) again and again, and the Prophet said in each case, "Do not become angry and furious." [Al-Bukhari; Vol. 8 No. 137]

Sunan Abu-Dawud.

eXTReMe Tracker