Top Panel
You are here: HomeNewsمسئلہ کشمیر کا حل اقوام متحدہ کی قراردادوں میں مضمر//قیم جماعت
Sunday, 23 August 2015 19:07

مسئلہ کشمیر کا حل اقوام متحدہ کی قراردادوں میں مضمر//قیم جماعت

Rate this item
(0 votes)

جماعت اسلامی ضلع کپواڑہ (الف) کا سالانہ اجتماع منعقد
مسئلہ کشمیر کا حل اقوام متحدہ کی قراردادوں میں مضمر//قیم جماعت
کپواڑہ//جماعت اسلامی جموں وکشمیرضلع کپواڑہ (الف) کا یک روزہ سالانہ دعوتی اجتماع جامع مسجد کپواڑہ میں امیر جماعت اسلامی محمد عبداللہ وانی کی صدارت میں منعقد ہوا جس میں ضلع بھر سے ہزاروں کی تعداد میں عوام نے شرکت کرکے جماعت کے نصب العین کے ساتھ وابستگی کا برملا اظہار کیا۔ امیر جماعت اسلامی محمد عبداللہ وانی نے اجتماع میں درس قرآن کا فریضہ انجام دیتے ہوئے سورۃ آل عمران کی روشنی میں شرکاء اجتماع کو نصائح کیں۔امیر جماعت نے انسانی زندگی میں ہدایت کی اہمیت کو اُجاگر کرتے ہوئے کہا کہ جو زندگی اللہ کی طرف سے نعمت ہے اگر وہ ہدایت سے خالی رہی تو یہی زندگی رحمت کے بجائے زحمت بن جائے گی۔ اسی طرح اللہ نے مال، دولت اوراولاد عطا کئے ہیں اور اگر یہ ساری چیزیں ہدایت کی نعمت سے خالی رہیں اور اِن چیزوں کو اگر ہدایت کے تحت صرف نہیں کیا گیا تو یہی چیزیں انسان کے لیے وبال جان بن جائیں گی۔امیر جماعت نے تلاوت قرآن، تدبر قرآن، حفظ قرآن، اشاعت قرآن، ابلاغ قرآن اور نفاذ قرآن کو ہدایت حاصل کرنے کا ذریعہ قرار دیا۔اقامت دین کے جامع تصور پر مدلل بات کرتے ہوئے امیر جماعت نے کہا کہ التزام تقویٰ، منظم اجتماعیت اورانبیائی مشن کی آبیاری اقامت دین کے بنیاد ی اصول ہیں۔ اجتماع میں شامل لوگوں کو اللہ کی ناراضگی سے اجتناب کرنے کی تاکید کرتے ہوئے امیر جماعت نے کہا کہ تحریک اسلامی سے وابستہ اشخاص کو چاہے کہ وہ نیک کاموں میں اپنی زندگی صرف کریں اور برائی سے ہرحال میں اجتناب کرنے پر زور دیتے ہوئے امیر جماعت نے کہا کہ رسول عربیﷺ نے جہاں اُمت تک اللہ کی کتاب اور اپنی مبارک سنت کو ابلاغ کیا تووہیں اس کے بعد اُمت کو ایک نظریہ کے سایے میں مجتمع کیا۔ کارکنان تحریک پر زور دیتے ہوئے کہا کہ آپ ہر حال میں اجتماعیت کے ساتھ چمٹے رہیں۔امیرجماعت نے کہا کہ جہاں ہم امر بالمعروف کا فریضہ انجام دیں وہیں اسلام کے لیے ضروری ہے کہ اس کے پاس سیاسی قوت ہو جس کے ذریعے سے اسلامی نظام کو نافذ کیا جاسکے۔اجتماع میں قیم جماعت ڈاکٹر عبدالحمید فیاض نے خطاب عام کا فریضہ انجام دیا۔موصوف نے کہا کہ دنیا میں جو بھی تحریکیں برپاہوئی ہیں، ایک پروگرام اور ایک نصب العین کو لیکر اُٹھی ہیں۔ان تنظیموں کامقصود ومطلوب تنظیم نہیں تھی بلکہ نصب العین اور پروگرام تھا۔ اسی طرح جماعت اسلامی جس چیز کی طرف لوگوں کو دعوت دیتی ہے وہ تنظیم نہیں بلکہ وہ نصب العین اور وہ پروگرام ہے جوقرآن کا بیان کردہ پروگرام ہے اور جس کی آبیاری رسول عربیﷺ نے اپنی پوری زندگی میں کی۔ڈاکٹر عبدالحمید فیاض نے کہا کہ ہمارے سماج نے دین اسلام کوکچھ رسوم تک محدودکیا ہے اور ہماری موجودہ زبوں حالی کی ایک وجہ یہ بھی ہے۔ لہٰذا اگر ہمیں اپنی اجتماعیت کو بحال کرنا ہے تو ہمیں دین کو بحیثیت نظام حیات تسلیم کرنا ہوگا۔موصوف نے تحریک اسلامی کے مقصد وجود پر بات کرتے ہوئے کہا کہ ہم چاہتے ہیں کہ اس دنیا میں اللہ کا نظام نافذ کیا جائے۔دشمنان دین کی چالوں پر بات کرتے ہوئے موصوف نے کہا آج دنیا میں ہمارا دشمن ہماری مسجدوں کے لئے قالین پیش کررہا ہے، مسلمان روزہ داروں کے لیے افطاری کا اہتمام بھی کررہا ہے، فریضہ حج کی ادائیگی کے لیے اعلیٰ سے اعلیٰ پروٹوکال فراہم کررہا ہے مگر جب اس سسٹم کو ہم اسلام کی طرف بحیثیت نظام دعوت دیتے ہیں تو یہی سسٹم بوکھلاہٹ کا شکار ہوکر ہمارے خون سے ہولی کھیل رہا ہے۔مسئلہ کشمیر پر بات کرتے ہوئے ڈاکٹر عبدالحمید فیاض نے کہا کہ ۱۹۴۷ء میں ڈوگرہ حکمرانوں نے ہندوستان کے ساتھ الحاق کرتے ہوئے ہمیں غلامی کی زنجیروں میں جکڑ دیا جبکہ بعد میں ہم سے ہندوستان کی اعلیٰ قیادت نے لعل چوک میں آکر ہم سے وعدہ کیا کہ ریاست کے باشندوں سے اُن کی رائے جانی جائے گی۔ مگر تاایں دم ہمارے لاکھوں لوگوں کو شہید کیا گیا اور ہزاروں کی تعداد میں ہمارے نوجوانوں کو زیر حراست لاپتہ کیا گیا۔ آج بھی جب دنیا میں اہل فکر لوگ اس مسئلہ کے تئیں دلچسپی کا مظاہرہ کرتے ہیں اور یہاں کے باشندوں کو راحت بہم پہنچانے کی سعی کرتے ہیں تو ہندوستان آگے آکر سب لوگوں کو رد کردیتا ہے جس کا مظاہرہ آج نیشنل سیکورٹی ایڈوائزرکی مجوزہ بات چیت میں دیکھا جاسکتا ہے۔جماعت اسلامی ہندوستان کی اعلیٰ قیادت تک یہ بات پہنچانا چاہتی ہے کہ اس انسانی مسئلہ کو جلد از جلد اقوام متحدہ کی قراردادوں کے ذریعہ حل کیا جائے بصورت دیگر سہ فریقی مذاکرات کے ذریعے جموں وکشمیر کے حقیقی نمائندوں کے ساتھ مل کرایساحل تلاش کیا جائے جو یہاں کے عوام کی خواہشات کے مطابق ہو۔مسئلہ کشمیر کے حل نہ ہونے سے ہی آج سرحدوں پر کشیدگی پائی جاتی ہے۔مخلوط حکومت کی مکروہ سازشوں پر بات کرتے ہوئے موصوف نے کہا کہ جب سے ریاست میں بی جے پی اور پی ڈی پی کی حکومت وجودمیں آئی ہے تب سے ایسی سازشوں کا جال بچھایا جارہا ہے جس سے یہاں کے مسلم تشخص کو خطرہ لاحق ہے۔حال ہی میں بی جے پی کی طرف سے سینک کالونی کے قیام کے منصوبہ پر بات کرتے ہوئے موصوف نے کہا کہ اس سازش کے ذریعے یہاں کے مسلم اکثریتی کردار کو ختم کرنے کا منصوبہ ترتیب دیا گیا ہے جو کہ ایک قابل مذمت اقدام ہے۔اجتماع سے جن دیگر مقررین نے خطاب کیا اُن میں نائب امیر جماعت نذیر احمد رعنا، ناظم شعبہ دعوت و تربیت مولانا طارق احمد مکی، معاون ناظم شعبہ دعوت و تربیت مولانا غازی معین الاسلام ندوی، اسلامی جمعیت طلبہ کے نمائندہ عزیزی سحر مدثر،سابق قیم جماعت غلام قادر لون، عبدالحمید اندرابی، پیر غلام رسول شامل ہیں۔ اجتماع نماز عصر کے ساتھ ہی اختتام پذیر ہوا۔
ایڈوکیٹ زاہد علی

Read 368 times

Al'Quraan

The woman and the man guilty of illegal sexual intercourse, flog each of them with a hundred stripes. Let not pity withhold you in their case, in a punishment prescribed by Allah, if you believe in Allah and the Last Day. And let a party of the believers witness their punishment. (This punishment is for unmarried persons guilty of the above crime but if married persons commit it, the punishment is to stone them to death, according to Allah's Law).

Al'Quraan Surah Noor

Prophet Mohammad PBUH

Narrated: Abu Huraira (R.A) that a man said to the Prophet, sallallahu 'alayhi wasallam: "Advise me! "The Prophet (PBUH) said, "Do not become angry and furious." The man asked (the same) again and again, and the Prophet said in each case, "Do not become angry and furious." [Al-Bukhari; Vol. 8 No. 137]

Sunan Abu-Dawud.

eXTReMe Tracker