Top Panel
You are here: HomeNewsمرکز جماعت پر اُمراء اضلاع ونظماء شعبہ جات کی نشست‘ مختلف مسائل زیر بحث
Thursday, 06 August 2015 19:02

مرکز جماعت پر اُمراء اضلاع ونظماء شعبہ جات کی نشست‘ مختلف مسائل زیر بحث

Rate this item
(0 votes)

۴؍اگست
سرینگر//جماعت اسلامی جموں وکشمیر کے جملہ امراء و قیمین اضلاع کے علاوہ نظماء شعبہ جات کی ایک مشترکہ نشست مرکز جماعت پر زیر صدارت امیر جماعت محمد عبداللہ وانی منعقد ہوئی جس میں تنظیمی سرگرمیوں اور دعوتی امور سے متعلق مفصل رپورٹیں پیش ہوئیں اور اُمت مسلمہ کو درپیش مقامی اور بین الاقوامی سطحوں پر درپیش مسائل کو بھی زیر بحث لایا گیا۔ ریاست کے طول و عرض میں ہندتوا ایجنڈا کی علمبردار اداروں اور تنظیموں کی روز افزوں سرگرمیوں پر بھی تبادلہ خیال ہوا اور اُن منصوبوں کو بھی زیر بحث لایا گیا جن کے ذریعے ریاست جموں وکشمیر کے مسلم اکثریتی شناخت کو ختم کرنے کی مذموم کارروائیوں کو انجام دیا جارہا ہے۔ ان کارروائیوں میں ۱۹۴۷ء میں مغربی پاکستان سے بھاگ کر آئے ہندو شرنارتھیوں کو صوبہ جموں میں مستقل طور پر بسانے، آئین ہند کی دفعہ ۳۷۰؍ کو تحلیل کرنے اور جموں وکشمیر کے کسی علاقے میں دوران ملازمت تعینات رہنے والے سابق فوجیوں کے لیے مختلف مقامات پر مستقل بستیاں قائم کرنے کے منصوبے بھی شامل ہیں۔ لاکھوں شرنارتھیوں کو مستقل سکونت دینے کے نتیجہ میں یہاں کی مسلمانوں کی اکثریت کا تناسب بہت حد تک کم ہوجائے گا، دفعہ ۳۷۰؍کو ہٹانے کے نتیجہ میں غیر ریاستی باشندے یہاں کی مستقل سکونت حاصل کرکے اس تناسب کو مزید کم کرنے کا باعث بن سکتے ہیں اور اس سے اس خطے کی متنازعہ حیثیت پر بھی ضرب آنے کا شدید اندیشہ ہے۔اسی طرح غیر ریاستی فوجیوں کو یہاں مستقل طور بسانے کے درپردہ ایک گہری سازش پنہاں ہے جس کے مہلک اثرات کا اس وقت تصور بھی نہیں کیا جاسکتا ہے۔ نشست میں اس حوالے سے گہری تشویش کا اظہار کرتے ہوئے‘ ریاستی عوام کو ان سازشوں سے خبردار رہنے کی تلقین کی گئی۔ نشست میں فرقہ وارانہ بھائی چارے کو زک پہنچانے کے حوالے سے چند عوام دشمن عناصر کی کارروائیوں کی بھی کڑی مذمت کرتے ہوئے‘ ریاستی عوام کو ہر قیمت پر آپسی رواداری کا ماحول قائم رکھنے کی اپیل کی گئی۔ نشست کے اندر مسلکوں اور خطوں کی بنیاد پر انتشار پھیلانے کی کوششوں کا تذکرہ کرتے ہوئے‘ نشست میں اتحاد ملت کی ضرورت کو اُجاگر کیا گیا اور اس بات پر زور دیا گیا کہ عوام کو ان انتشاری عناصر سے خبردار کیا جائے اور آپسی اتحاد و اتفاق کو ہر سطح پر مستحکم بنانے کی خاطر‘ ایک بیداری مہم چلائی جائے۔ نشست میں اسلامیانِ جموں وکشمیر کے اندر دین بے زاری، منشیات اور بے حیائی کو فروغ دینے کے تمام اقدامات پر تشویش کا اظہار کرتے ہوئے‘ اس طرح کی کارروائیوں میں ملوث عناصر اور اداروں کی کڑی مذمت کی گئی اور شرکاء مجلس پر زور دیا گیا کہ مسلمانوں کے اندر دینی بیداری کی زور دار مہم چلائی جائے اور اس سلسلے میں جگہ جگہ پر دعوتی و تبلیغی سرگرمیوں میں سرعت لائی جائے۔آخر پر امیر جماعت اسلامی محمد عبداللہ وانی نے ضروری ہدایات دیتے ہوئے ‘ اس حقیقت کو اُجاگر کیا کہ اسلام ہی وہ نظام رحمت عطا کرتا ہے جس کے اندر انسانی شرف و وقار کو مکمل تحفظ حاصل ہے اور امن و امان اور عدل و انصاف کی ضمانت بھی موجود ہے لیکن عوام کو اسلام کی برکتوں کے حصول کی طرف متوجہ کرنے کے لیے ضروری ہے کہ داعئ اسلام خود قول و عمل میں کسی تضاد کا شکار نہ ہو بلکہ اسلام کا ایک چلتا پھرتا نمونہ ہو اور کسی بھی صورت میں اپنی بے عملی اور بدعملی سے اسلام اور پیغمبر اسلام صلی اللہ علیہ وسلم کی بدنامی کا باعث نہ ہو۔ انہوں نے وابستگان جماعت کو اپنے گھروں کو اسلامی تعلیمات سے منور کرنے پر زور دیا تاکہ عوام الناس تحریک اسلامی کا معاون بننے میں خوشی محسوس کریں۔

Read 290 times

Al'Quraan

The woman and the man guilty of illegal sexual intercourse, flog each of them with a hundred stripes. Let not pity withhold you in their case, in a punishment prescribed by Allah, if you believe in Allah and the Last Day. And let a party of the believers witness their punishment. (This punishment is for unmarried persons guilty of the above crime but if married persons commit it, the punishment is to stone them to death, according to Allah's Law).

Al'Quraan Surah Noor

Prophet Mohammad PBUH

Narrated: Abu Huraira (R.A) that a man said to the Prophet, sallallahu 'alayhi wasallam: "Advise me! "The Prophet (PBUH) said, "Do not become angry and furious." The man asked (the same) again and again, and the Prophet said in each case, "Do not become angry and furious." [Al-Bukhari; Vol. 8 No. 137]

Sunan Abu-Dawud.

eXTReMe Tracker