Top Panel
You are here: HomeNewsجموں کے تعلیمی اداروں میں ہتھیارو ں کی تربیت ، مسلمانوں کے خلاف خفیہ سازش کا حصہ ہے جماعت
Saturday, 11 July 2015 19:08

جموں کے تعلیمی اداروں میں ہتھیارو ں کی تربیت ، مسلمانوں کے خلاف خفیہ سازش کا حصہ ہے جماعت

Rate this item
(0 votes)

٨/جولائی

سرینگرجموں کے کچھ نجی تعلیمی اداروں میں وہاں زیر تعلیم طلبا کو فرقہ وارانہ بنیادوں پر ہتھیاروں کی تربیت کا باضابطہ آغاز کیا گیا ہے اور اُن کے ذہنوں میں فرقہ پرستی کا زہر بھر کر مسمول کرنے کی کوششیں بھی ہو رہی ہیں ۔ لگتا ہے کہ وہاں مسلمانوں کی اقلیتی آبادی کو ڈرا دھمکا کر وہاں سے بھگانے کی خفیہ منصوبہ بندی ہورہی ہے اور ٧٤٩١ئ؁ میں پیش آئے قتل عام کے واقعہ کو دہرانے کے لیے ایک قسم کا ریہرسل ہورہا ہے۔ ان طلبا کو مذہبی جنونیت اور انتہا پسندی کے سبق بھی پڑھائے جارہے ہیں اور اس کے لیے اس میدان کے ماہر سادھوں سنتوں کی خدمات بھی حاصل کی جارہی ہیں ۔ جب سے بی جے پی ایک شراکت دار کے طور پر یہاں کے سنگھاسن اقتدار پر قابض ہو گئی تب سے جموں صوبے کے اکثر علاقوں میں ہندو جنونی عناصر کے حوصلے بڑھنے لگے اور وہ کھلے عام مسلمانوں کو دھمکیاں بھی دینے لگے ہیں ۔ بشنا علاقے میں مسلمانوں کے قبرستان پر ان فرقہ پرستوں نے وہاں کے صوبائی کمشنر کے امتناعی احکامات کے باوجود’’ دنگل‘‘ کا مذہبی رسم ادا کرکے، مسلمانوں کے اندر خوف و دہشت کو مزید پھیلایا ۔ اس واقعہ سے ثابت ہوتا ہے کہ جموں کی انتظامیہ اور پولیس یا تو ان فرقہ پرست جنونیوں کے ساتھ ملی ہوئی ہے یا اُن کے سامنے بالکل بے بس ہے۔

 جماعت اسلامی جموں وکشمیر، صوبہ جموں میں آر ایس ایس اور اس کی ذیلی تنظیموں کی بڑھتی ہوئی ان فرقہ پرستانہ سرگرمیوں پر زبردست تشویش کا اظہار کرتے ہوئے، جموں کے مسلمانوں خاص کر علمائ کرام اور عمائدین حضرات سے تلقین کرتی ہے کہ وہ اس معاملہ کو سنجیدگی کے ساتھ لیں اور مسلمانوں کے درمیان مکمل ہم آہنگی اور اتحاد قائم رکھنے کے لیے اپنی کوششوں کو تیز کریں نیز جو عناصر مسلمانوں کے درمیان مسلکی اور فروعی اختلافات کو ہوا دے کر اُن کے اندر انتشار پھیلانے کی مذموم کوششوں میں مصروف ہوں ، ان کا ڈٹ کر مقابلہ کیا جائے اور مسلمانوں کو ان انتشاری کوششوں سے ہونے والے نقصانات سے آگاہ کیا جائے۔

 جماعت اسلامی یہاں کے ارباب اقتدار پر زور دیتی ہے کہ وہ ان فرقہ پرست عناصر کو کوئی موقعہ دئیے بغیر لگام دیں ۔ کیا یہ عناصر امن عامہ کے لیے کوئی خطرہ نہیں ہیں ؟ پھر اُن کے خلاف پبلک سیفٹی ایکٹ کا نفاذ کیوں نہیں ہوتا؟ کیا اس کے لیے صرف مسلمان ہی ہیں جن کے بچوں تک کوسنگ بازی کے بے بنیاد الزامات دے کر اس سیاہ قانون کے تحت نظر بند کیا جاتا ہے۔ جماعت اسلامی اس صریح ناانصافی کے خلاف سخت احتجاج کرتی ہے۔

Read 228 times

Al'Quraan

The woman and the man guilty of illegal sexual intercourse, flog each of them with a hundred stripes. Let not pity withhold you in their case, in a punishment prescribed by Allah, if you believe in Allah and the Last Day. And let a party of the believers witness their punishment. (This punishment is for unmarried persons guilty of the above crime but if married persons commit it, the punishment is to stone them to death, according to Allah's Law).

Al'Quraan Surah Noor

Prophet Mohammad PBUH

Narrated: Abu Huraira (R.A) that a man said to the Prophet, sallallahu 'alayhi wasallam: "Advise me! "The Prophet (PBUH) said, "Do not become angry and furious." The man asked (the same) again and again, and the Prophet said in each case, "Do not become angry and furious." [Al-Bukhari; Vol. 8 No. 137]

Sunan Abu-Dawud.

eXTReMe Tracker