Top Panel
You are here: HomeNewsایمنسٹی انٹرنیشنل کی رپورٹ چشم کشا
Thursday, 02 July 2015 18:57

ایمنسٹی انٹرنیشنل کی رپورٹ چشم کشا

Rate this item
(0 votes)

٢/جولائی

سرینگرانسانی حقوق کی عالمی تنظیم ایمنسٹی انٹرنیشنل کی طرف سے جموں وکشمیر میں انسانی حقوق کی سرکاری خلاف ورزیوں سے متعلق شائع شدہ رپورٹ عالم انسانیت کے لیے چشم کشا کی حیثیت رکھتا ہے کیونکہ اس میں واضح طور پر بھارت کی اُن ظالمانہ کارروائیوں پر سے پردہ اُٹھایا گیا ہے جو افسپا اور دیگر ظالمانہ قوانین کی آڑ میں یہاں تعینات بھارتی فوج اور دیگر ایجنسیاں بشمول مقامی پولیس ٹاسک فورس یہاں کے مظلوم عوام پر انجام دے رہی ہیں ۔ ٢٧/صفحات پر مشتمل اس رپورٹ میں واضح طور پر گزشتہ پچیس سال کے دوران سرکاری اعداد و شمار کے مطابق ٣٤/ہزار افراد کو جابحق ہونا دکھایا گیا ہے حالانکہ حقیقت میں یہ تعداد اس سے بہت زیادہ ہے۔ دس ہزار سے زائد بے گناہ افراد کو حراست میں لینے کے بعد لاپتہ کردیا گیا ہے اور دسیوں کی تعداد میں مختلف مقامات پر لاوارث قبرستان بھی موجود ہیں جہاں فرضی انکاونٹر کے تحت بے گناہ افراد کو پکڑ پکڑ کرقتل کرکے ان میں دفنایاگیا اور نقدی انعامات اور ترقیوں کے لیے جعلی کارکردگی رپورٹیں بناکر، اپنی ہی حکومت کی بیوقوف بنایا گیا۔ سرکار نواز بندوق برداروں نے جو قتل و غارت اور لوٹ مار کا سلسلہ یہاں سالہا سال تک جاری رکھا، وہ کسی سے ڈھکا چھپا نہیں ۔ انہی سرکاری بندوق برداروں کے ہاتھوں یہاں ہزاروں علمائ کرام، دانشور حضرات اور عوام کے بہی خواہ نمائندوں کو پر اسرار طریقے پر قتل کروایا گیا۔ صنف نازک کے ساتھ ایسا ناشائستہ سلوک کیا گیا جس کی تاریخ میں بہت ہی کم مثالیں ملتی ہیں یہاں تک دنیا کے ظالم ترین بادشاہوں میں درج فرعون نے بھی اپنے دور ظلمت میں عورت ذات کو چھیڑا نہیں تھا لیکن دور حاضر میں دنیا کی سب سے بڑی جمہوری مملکت نے جموں وکشمیر میں اس عورت ذات کے ساتھ کیا سلوک کیا، وہ سب پر عیاں ہے۔ تھانوں ، اذیت خانوں اور جیلوں میں نظر بندوں کے ساتھ حیوانوں سے بدترسلوک روا رکھا گیا اور کئی مقامات پر نظربندوں کو پھاٹک نما قید خانوں میں بند رکھ کے، اُن کو بھوکا ننگا رکھارکھا گیا، پینے کے لیے پانی بھی بہت ہی مشکل سے ان کو فراہم کیا جاتا تھا۔ اُن کو تڑپانے میں جیلر اور سیکورٹی اہلکار بہت ہی مزہ لیتے تھے، ہفتوں اور مہینوں تک ان کو نہانے کا موقعہ نہیں دیا جاتا تھا جس کے نتیجہ میں انہیں ذہنی و جسمانی مہلک عارضے لاحق ہوگئے۔ ظلم و ستم کا وہ کوئی ہتھیار ہی نہیں جو یہا ں کے مظلوم او ربے کس عوام پر آزمایا نہیں گیا۔

 جماعت اسلامی جموں وکشمیر عالم دنیا کے ساتھ ساتھ انسانی حقوق کے بین الاقومی اداروں سے بھی اپیل کرتی ہے کہ وہ رپورٹ کا سنجیدہ نوٹس لیں ااور ایک غیرجانبداری عالمی ادارے کے ذریعے انسانی حقوق کی ان تمام خلاف ورزیوں میں ملوث سرکاری اہلکاروں کے خلاف عالمی عدالت انصاف میں باضابطہ مقدمہ دائر کریں اور اس وقت بھی ان ظالمانہ قوانین کی آڑ میں جو ظلم و ستم اور حق تلفی یہاں کے عوام پر رائج ہے۔ اُس کا بھی سنجیدہ نوٹ لیں ۔

Read 262 times

Al'Quraan

The woman and the man guilty of illegal sexual intercourse, flog each of them with a hundred stripes. Let not pity withhold you in their case, in a punishment prescribed by Allah, if you believe in Allah and the Last Day. And let a party of the believers witness their punishment. (This punishment is for unmarried persons guilty of the above crime but if married persons commit it, the punishment is to stone them to death, according to Allah's Law).

Al'Quraan Surah Noor

Prophet Mohammad PBUH

Narrated: Abu Huraira (R.A) that a man said to the Prophet, sallallahu 'alayhi wasallam: "Advise me! "The Prophet (PBUH) said, "Do not become angry and furious." The man asked (the same) again and again, and the Prophet said in each case, "Do not become angry and furious." [Al-Bukhari; Vol. 8 No. 137]

Sunan Abu-Dawud.

eXTReMe Tracker