Top Panel
You are here: HomeNewsپیلٹ گن کا استعمال انسانی حقوق کی بدترین خلاف ورزی، کشمیریوں کی جدوجہد مبنی برحق
Sunday, 31 May 2015 19:13

پیلٹ گن کا استعمال انسانی حقوق کی بدترین خلاف ورزی، کشمیریوں کی جدوجہد مبنی برحق

Rate this item
(1 Vote)

بے حیائی اور منشیات کو جان بوجھ کر فروغ دیا جارہا ہے،برما ، مصر اور بنگلہ دیش کی صورتحال تشویشناکامیر جماعت

جماعت اسلامی جموں وکشمیر ضلع سرینگر کے اجتماع میں ہزاروں لوگوں کی شرکت

 سرینگرجماعت اسلامی جموں وکشمیر ضلع سرینگر کا سالانہ اجتماع آج شہر سرینگر کے قلب واقع سپورٹس گراونڈ بابا ڈیمپ میں منعقد ہوا۔ اجتماع میں ضلع سرینگر سے تعلق رکھنے والے ہزاروں لوگوں نے شرکت کی۔ اجتماع میں امیر جماعت اسلامی محمد عبداللہ وانی نے سورہ الحجرات کی آیات کی روشنی میں درس قرآن پیش کرتے ہوئے کہا کہ اللہ تعالیٰ نے اصلاح معاشرے کے لیے قرآن مجید میں واضح ہدایات نازل کیے ہیں ۔معاشرے کو بگاڑنے میں چغل خوری، غیبت، تجسس، ایک دوسرے کی عیب اُچھالنا اور دوسروں کے معاملات میں بے جادخل اندازی کرنے کا اہم رول ہوتا ہے اس لیے قرآن پاک میں اللہ تعالیٰ مومنین کو ان بیماریوں سے باز رہنے کے لیے واضح حکم دیتا ہے۔ محمد عبداللہ وانی نے کہا کہ ایک صالح معاشرہ تعمیر کرنے کے لیے ضروری ہے کہ ہم چغل خوری، غیبت اور عیب جوئی سے باز رہیں ۔ اپنے معاشرے میں حسن ظن پیدا کرنے سے ہی اسلامی معاشرہ تشکیل پاسکتا ہے ۔ بصورت دیگر اُمت مسلمہ اپنی دینی بنیادوں سے دور ہوتی جائے گی اور مسلمان صرف نام کے رہ جائیں گے۔ امیر جماعت نے کہا کہ ہمیں اپنے معاشرے میں دوسرے مسلمانوں کے بارے میں حسن ظن سے کام لینا چاہیے اور اُن کے ساتھ دینی بنیادوں پر تعلقات قائم کرلینے چاہیے۔اپنے خطاب عام میں قیم جماعت اسلامی ڈاکٹر عبدالحمید فیاض نے جماعت اسلامی جموں وکشمیر کی پالیسی بیان کرتے ہوئے کہا کہ جماعت اسلامی کا مختلف ایشوز کے حوالے سے واضح اور دو ٹوک مؤقف ہے اور ہم باتوں میں یقین کرلینے کے بجائے عملی زندگی میں تبدیلی کے خواہاں ہیں ۔ قیم جماعت نے مسئلہ کشمیر کی تاریخی حیثیت بیان کرتے ہوئے کہا کہ کشمیریوں کی جدوجہد برائے حق خود ارادیت مبنی برحق ہے اور اس تحریک کے لیے اس قوم نے ایک لاکھ سے زائد انسانی جانوں کی قربانیاں پیش کی ہیں ۔ ٠٣/ہزار بیوائیں اور دو لاکھ کے قریب یتیم بچے اور سینکڑوں خواتین کی عصمت ریزیاں اس بات کی گواہیاں دے رہی ہیں کہ مسئلہ کشمیر کے منصفانہ حل کے خاطر کشمیری قوم کا سب کچھ داؤ پر لگا ہوا ہے۔ تریپورہ آسام میں افسپا ہٹائے جانے کی مثال پیش کرتے ہوئے قیم جماعت نے کہا کہ ریاست جموں وکشمیر میں بھی اس قانون کی آڑ میں وردی پوش انسانی حقوق کی پامالیاں کرنے میں مشغول ہیں اور اب یہاں بھی اس قانون کو ہٹائے جانے کے لیے آوازیں اُٹھ رہی ہیں ۔لیکن بھارتی محکمہ دفاع کسی بھی صورت میں ریاست جموں وکشمیر کے مخصوص علاقوں سے بھی یہ سیاہ قانون ہٹانے کے حق میں نہیں ہے۔ قیم جماعت نے کہا کہ مسئلہ کشمیر کے حل ہوجانے سے تمام مسائل از خود حل ہوجائیں گے اور جماعت اسلامی کا مؤقف یہ ہے کہ اس مسئلے کا حل اقوام متحدہ کی قرار دادوں کے ذریعے سے نکالا جانا چاہیے اور اگر کسی وجہ سے اُن قرار دادوں کر عمل آوری ممکن نہ ہوسکے گی تو پھر سہ فریقی مذاکرات کے ذریعے سے جس میں کشمیریوں کے حقیقی نمائندے شامل ہوں اس مسئلہ کا حل کشمیریوں کی خواہشات کے عین مطابق نکالا جانا چاہیے۔انسانی حقوق کی مسلسل خلاف ورزیوں کی مذمت کرتے ہوئے قیم جماعت نے کہا کہ٠١٠٢ئ؁ میں انسانی جانوں کے اتلاف کا گراف کم کرنے کی خاطر احتجاجوں سے نمٹنے کے لیے غیر مہلک ہتھیار استعمال کرنے کی یقین دہانی کرائی گئی لیکن جنگلی جانوروں کے خلاف استعمال کیا جانے والا پلیٹ گن متعارف کرایا گیا اور اس انسان دشمن ہتھیار کا نشانہ درجنوں نوجوان بن گئے ۔ انہوں نے اعداد و شمار پیش کرتے ہوئے کہا کہ 2010 سے تا حال 36 نوجوان بینائی سے محروم ہوچکے ہیں ۔ قیم جماعت نے حکومت کو آڑے ہاتھوں لیتے ہوئے کہا کہ جہاں گزشتہ حکومت کے دور میں پی ڈی پی نے پلیٹ گن کے استعمال کے خلاف اسمبلی سے واک آوٹ کیا تھا وہیں آج حکومت میں رہ کر یہ لوگ خود اس ہتھیار کا استعمال کرکے نوجوان نسل کو بے کار بنانے کا جرم عظیم انجام دے رہے ہیں ۔ اس کی تازہ مثال پلہالن پٹن کا دسویں جماعت کا طالب علم حامد نذیر بٹ ہے جسے پلیٹ گن کے ذریعے اندھا بنادیا گیا۔قیم جماعت نے کہا کہ وادی میں جان بوجھ کر بے حیائی اور منشیات کو فروغ دیا جارہا ہے۔ حکومت وقت کروڑوں روپیہ فلمی دنیا کے لوگوں پر خرچ کرنے کے لیے بے تابی کا مظاہرہ کررہی ہے جبکہ سیلاب متاثرین تاحال بنیادی امداد سے محروم رکھے گئے ہیں ۔ نوجوان نسل کو منشیات کی بیماری میں جان بوجھ کر مبتلا کیا جارہا ہے اور یہ سازشیں ہیں کشمیری نسل نو کو بے کار بنانے کی ۔سرکاری ملازمین پر پولیس کی جانب سے طاقت کا بے جا استعمال کیے جانے پر قیم جماعت نے کہا کہ سرکاری ملازمین اپنے جائز حقوق کے لیے پُر امن طریقے سے مانگ کررہے ہیں تو حکومت اُن کے خلاف طاقت کا استعمال کرتی ہے اور یہ ملازمین کے بنیادی حقوق کی خلاف ورزی کے ساتھ ساتھ قوم کشمیر کی تذلیل بھی ہے کہ جو لوگ یہاں زندگی کے تمام شعبوں کا نظام چلانے میں اپنی صلاحتیں بروئے کار لارہے ہیں ، حکمران ٹولہ اُن کی جائز مانگوں کو پورا کرنے کے بجائے اُن کے طاقت کا استعمال کرکے اُن کی آواز کو دبارہی ہے۔ہندوستان میں مسلمانوں پر ظلم و جبر روا رکھے جانے کی شدید الفاظ میں مذمت کرتے ہوئے قیم جماعت نے کہا کہ ہریانہ میں جاٹ قبیلے سے تعلق رکھنے والے لوگوں نے ایک مسلمان بستی پر حملہ کرکے مرد، عورت اور بچوں کو زد کوب کیا اور متعددمسلمان شدید زخمی کردئے گئے ۔ جاٹ مسلمانوں کو مسجد تعمیر کرنے سے روکنے کے بہانے یہ فرقہ پرستانہ کارروائیاں کررہے ہیں ۔ انہوں نے کہا کہ اس طرح کے طرز عمل سے ہندوستان کی مذہبی آزادی کے دعوؤں پر سوالیہ نشان لگ جاتا ہے اور ایسے مسلم دشمن کارروائیاں مسلمانانِ ہند کو عدم تحفظ کا شکار بنا رہی ہیں ۔اُمت مسلمہ کی زبوں حالی کا تذکرہ کرتے ہوئے ڈاکٹر عبدالحمید فیاض نے کہا کہ برما میں مسلمانوں کا قتل عام ہورہا ہے۔ وہاں خواتین کے ساتھ دست درازی اور بچوں کا بے دردی کے ساتھ قتل عام دن دھاڑے ہورہا ہے حتیٰ کہ امریکہ سے شائع ہونے والے بین الاقوامی شہرت یافتہ ٹائم میگزین نے اس حوالے سے Cover Story میں برمی بودھ دہشت گردی کا عبرتناک چہرہ بے نقاب کردیا ہے لیکن اس کے باوجود نام نہاد جمہوری دنیا ٹس سے مس نہیں ہورہی ہے۔ قیم جماعت نے کہا ہے کہ برما ،عراق، شام، بنگلہ دیش اور مصر کی صورتحال تشویشناک ہے اور انہوں نے عالم اسلام سے اپیل کی کہ وہ ان مسائل کے حوالے سے سنجیدگی کا مظاہرہ کرکے ٹھوس اقدامات کریں ۔اس کے علاوہ جن دوسرے مقررین نے اس اجتماع سے خطاب کیا ہے اُن میں نائب امیر جماعت اسلامی نذیر احمد رعنا، ناظم شعبہ دعوت و تربیت مولانا طارق احمد مکی، معاون ناظم شعبہ دعوت و تربیت مولانا غازی معین الاسلام ندوی، ناظم اعلیٰ اسلامی جمعیت طلبہ عمر سلطان، امیر ضلع شوپیان شہزادہ اورنگ زیب مکی، امیر ضلع اسلام آباد احمد اللہ پرے مکی، قیم ضلع گاندربل بشیر احمد لون، قیم ضلع بڈگام خاکی محمد فاروق شامل ہیں ۔ادارۂ فکر و ادب کے اہتمام سے اجتماع میں فہیم عرفانیؔ کی صدارت میں ایک ادبی نشست میں منعقد ہوئی جس میں نامور شعرائ نے اپنا کلام پیش کیا۔اس موقع پر اجتماع کے متصل جماعت اسلامی ضلع سرینگر کے اہتمام سے ایک میڈیکل کیمپ کا اہتمام کیا گیا تھا جس میں دو ہزار سے زائد مریضوں کا علاج و معالجہ کیا گیا اور ہزاروں روپے مالیت کی دوائیاں بھی مفت تقسیم کی گئی۔ نماز عصر کے ساتھ یہ اجتماع اختتام پذیر ہوا۔

Read 396 times

Al'Quraan

The woman and the man guilty of illegal sexual intercourse, flog each of them with a hundred stripes. Let not pity withhold you in their case, in a punishment prescribed by Allah, if you believe in Allah and the Last Day. And let a party of the believers witness their punishment. (This punishment is for unmarried persons guilty of the above crime but if married persons commit it, the punishment is to stone them to death, according to Allah's Law).

Al'Quraan Surah Noor

Prophet Mohammad PBUH

Narrated: Abu Huraira (R.A) that a man said to the Prophet, sallallahu 'alayhi wasallam: "Advise me! "The Prophet (PBUH) said, "Do not become angry and furious." The man asked (the same) again and again, and the Prophet said in each case, "Do not become angry and furious." [Al-Bukhari; Vol. 8 No. 137]

Sunan Abu-Dawud.

eXTReMe Tracker